لاہور دھماکے میں بھارتی اور افغان خفیہ ایجنسیوں کے ملوث ہونے کا انکشاف

اسلام آباد:(ویب ڈیسک) لاہور دھماکے میں افغان انٹیلی جنس ایجنسی این ڈی ایس اور بھارتی خفیہ ایجنسی را کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے جس سے دونوں ممالک کی خفیہ ایجنسیوں کا گٹھ جوڑ بے نقاب ہوگیا۔

ذرائع کے مطابق لاہور دھماکے میں بھارت اور افغانستان کی خفیہ ایجنسیوں را اور این ڈی ایس کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ ملکی خفیہ ایجنسیوں نے ایک بار پھر مذموم عزائم کا سراغ لگا لیا جس سے بھارت کے مذموم عزائم کھل کر سامنے آگئے۔

ایک بار پھر ثابت ہوگیا کہ را اور این ڈی ایس کے ذریعے پاکستان میں دہشت گرد کارروائیاں کر کے ملک میں قائم امن اور آشتی کو خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ پاکستا ن ایک عرصے سے اس حوالے سے عالمی قوتوں کے سامنے سوالات اُٹھاتا رہا ہے۔
پاکستان کی انٹیلی جنس ایجنسیز نے اس حوالے سے بار ہا ثبوت دُنیا کے سامنے رکھے ہیں جب کہ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، این ڈی ایس اور را کے گٹھ جوڑ کو پہلے ہی ڈوزئیر کی شکل میں دُنیا کے سامنے بے نقاب کر چکے ہیں۔

بلوچستان، قبائلی اضلاع اور لائن آف کنٹرول پر مسلسل ناکامی کے بعد را اوراین ڈی ایس کی بے چینی میں مزید اضافہ ہوا ہے، پاکستان میں امن اور ترقی دُشمن کی آنکھوں میں کھٹکنے لگی ہے اور اسی لیے سلیپر ز سیل کے ذریعے دہشت گردی کی کارروائیوں کی ناکام کوشش کی گئی۔

دشمن بھول گیا کہ پاکستان کی سیکیورٹی مضبوط ہاتھوں میں ہے۔ پاک سرزمین کی انٹیلی جنس ایجنسیز اس حوالے سے مکمل چوکنا اور دُشمن انٹیلی جنس ایجنسیز کے منصوبوں کو ناکام بنانے کے لئے دن رات مصروف عمل ہیں۔ دشمن کے منصوبے کسی صورت کامیاب نہیں ہوں گے۔

اس تمام صورت حال میں یہ سوال بھی اُٹھتا ہے کہ ٹھوس شواہد کے باوجود کیا بین الاقوامی ادارے اب ہندوستان کو کٹہرے میں لائیں گے یا اب بھی پاکستان کو ہی مورد الزام ٹھہرایا جاتا رہے گا؟