سیٹھ لطیف کا بیٹا باعزت بری، سابقہ اہلیہ کے تمام الزامات مسترد

نیویارک:(سب رنگ نیوز) سیٹھ لطیف کی سابقہ اہلیہ کی جانب سے سیٹھ لطیف کے بیٹے کے خلاف نیوجرسی کی عدالت میں تمام الزامات غلط ثابت ہوئے اور انہیں باعزت بری کردیا گیا

تفصیلات کے مطابق سیٹھ لطیف کی سابقہ اہلیہ سحرش جنہوں نے سیٹھ لطیف اور ان کے بیٹے زاہد لطیف کو پھنسانے کیلئے ان پر مبینہ الزامات لگائے تھے جن میں اسلحہ دکھانے، ان کی آبروریزی اور مارپیٹ کرنے جیسے سنگین الزامات شامل تھے۔ نیوجرسی عدالت نے وکیلوں کی طویل جرح کے بعد سحرش علی کو جھوٹا قرار دیا اور تمام الزامات نہ صرف مسترد کر دئیے بلکہ ان کے خلاف ری سٹیٹننگ آرڈر بھی دینے سے انکار کر دیا ۔

یاد رہے کہ اس پورے واقعے میں سحرش علی کی معاونت میں نیوجرسی کے ایک سیاستدان ، ایک جعلی صحافی اور ایک نام نہاد خواتنی کی تنظیم شامل تھے جنہوں نے شالیمار چین کا آدھا حصہ اور سیٹھ لطیف کی جائیداد ہتھیانے کا منصوبہ بنایا تھا۔

سحرش علی اور ا سکی سہیلی نصرت سہیل ، سیٹھ لطیف کے بچوں اور بیوی کے کپڑے ، زیورات اور قیمتی اشیاء چرا کر ایک بوتیک میں بیچ رہی تھیں جس پر سیٹھ لطیف کی فیملی کی طرف سے نصرت سہیل اور سحرش علی پر اسٹیٹ اور کاؤنٹی میں الگ الگ مقدمات درج ہو چکے ہیں۔