نیویارک: پاکستانی امریکن کمیونٹی و صحافتی تنظیموں کا افطار ڈنر، پاکستانی طالبہ پر تیزاب پھینکے جانے کی بھر پور مذمت

نیویارک ( فاروق مرزا سے ) امریکا کی ریاست ناسا کائونٹی آئی لینڈ میں میڈیکل کی پاکستانی طالبہ نافع فاطمہ پر تیزاب پھینکے جانے کے خلاف نیویارک میں پاکستانی امریکن کمیونٹی اور صحافتی تنظیموں کے زیر اہتمام افطار ڈنر کا اہتمام ،واقعہ پر اظہار افسوس ،متاثرہ لڑکی کو جلد از جلد انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ ۔ تفصیلات کے مطابق امریکا میں پاکستانی طلبہ پر تیزاب پھینکے جانے کے واقعہ کیخلاف پاکستانی امریکن کمیونٹی میں خوف کی فضا برقرار ہے تاہم گزشتہ روز صحافتی تنظیم فورتھ پلر ویجیلنس میڈیا واچ ڈاگ ،پاک وطن ٹی وی ،دنیا نیوز اور ایکس پی این کے زیراہتمام ایک افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا جس میں کمیونٹی سے متعلقہ افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے شرکاء کا کہنا تھا کہ پاکستانی کمیونٹی کو اتحاد کے ذریعے اپنی عزت و وقار بحال کرناہوگا ، اگر متحد نہ ہوئے تو کوئی ہماری عزت نہیں کرے گا۔

فورتھ پلر میڈیا کے صدر فاروق مرزا نے خطاب میں کہا کہ کسی پاکستانی امریکن لڑکی کے ساتھ ایسا واقعہ پہلی بار ہوا ہے ،ایسا واقعہ پاکستان میں ہوتا تو بہت شور مچتا ،افسوس پاکستانی کمونٹی اپنی ہی بیٹی کے لئے آواز اٹھانے سے کترا رہی ہے ، دنیا نیوز کے منظور حسین نے کہا کہ اگر کمیونٹی اتحاد کا مظاہرہ کرے تو ہم اپنا مئیر منتخب کرا سکتے ہیں۔ پاک وطن ٹی وی کے سید شہباز نے کہا کہ کمیونٹی کو متحد رکھنے میں میڈیا اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

کالم نگار طیبہ چیمہ نے کہا کہ ظلم چاہے کسی بھی رنگ نسل اور مذہب کے فرد سے ہو وہ ظلم ہے ،انسانیت سے بڑھ کر کوئی رشتہ نہیں ہوتا، نافع فاطمہ کے واقعے کے بعد سے افسردہ ہوں ،ہم یہ سوچتے ہیں کہ کسی کے ساتھ ظلم ہوا ہے ہمارے ساتھ تو نہیں ہوا ، افسوس امریکا جیسے خواتین کے حقوق کے چیمپئن ملک میں یہ واقعہ ہوا۔

تقریب میں ایکس پی این کے چیف ایڈیٹر ، خواتین کی تنظیم PASWO کی سربراہ مس عطیہ اور دیگر نے بھی شرکت کی

بعد ازاں شرکاء کے اعزاز میں پرتکلف افطار کا اہتمام کیا گیا ۔